124

کورونا کیخلاف ایک اور موثر دوا ڈھونڈ لی گئی ، صرف 8 ہزار روپے میں کتنے مریضوں کا علاج ہو سکتا ہے ؟ ماہرین نے خوشخبری سنا دی


لندن(ڈیلی پریس کانفرنس) کورونا وبا سے متعلق ایک اچھی خبر موصول ہوئی ہے کہ عام اور کم خرچ اسٹرائڈ نہ صرف کووڈ 19 کے خلاف موثر ہے بلکہ مریضوں کی زندگیاں بھی بچاسکتی ہیں۔ اسی بنا پرڈاکٹروں نے اسے ایک اہم پیش رفت بھی قرار دیا ہے۔ایکسپریس نیوز کی رپورٹ کے مطابق ماہرین نے کہا ہے کہ کووڈ 19 کی شدید کیفیات کے شکار بعض مریضوں کو تجرباتی طور پر جب ”ڈیکسا میتھاسون “نامی اسٹرائڈ کی خوراک دی گئی تو ان میں اندرونی سوزش (انفلیمیشن) میں کمی ہوئی اور اموات میں بھی کمی واقع ہوئی۔ اس طرح ایک تہائی مریضوں میں یہ بہتری سامنے آئی ہے۔’اس کا مطلب یہ ہے کہ کورونا وائرس سے بیمار وہ افراد جو وینٹی لیٹر پر جاچکے ہیں، یا پھر آکسیجن پر ہیں ڈیکسا میتھاسون لے سکتے ہیں اور اس موقع پر بھی نہایت کم خرچ نسخے پر ان کی جان بچائی جاسکتی ہے،‘ اس آزمائشی سروے کے نگراں پروفیسر مارٹن لینڈرے نے کہا جو آکسفرڈ یونیورسٹی سے تعلق رھتے ہیں۔ کووڈِ 19 مرض کے خلاف مختلف ادویہ کی آزمائش کے لیے جاری اس منصوبے کو ’بحالی‘ یا ’ریکووری‘ کا نام دیا گیا ہے۔
ڈاکٹر مارٹن نے بتایا کہ یہ دوا اتنی سستی ہے کہ صرف 63 ڈالر یا آٹھ ہزار روپے ہے اور اس سے آٹھ مریضوں کا علاج کیا جاسکتا ہے۔ اس سروے میں شامل دوسرے ماہرین پیٹر ہوربی نے کہا کہ ڈیکسامیتھاسون واحد دوا ہے جس نے اموات کو روکنے میں نمایاں کارکردگی دکھائی ہے جو ایک اہم سنگِ میل ہے۔ یہ فوری طور پر دستیاب کم خرچ دوا ہے جسے پوری دنیا میں جان بچانے کے لیے استعمال کیا جاسکتا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں