123

ورلڈ کپ 2018: کولمبیا کے خلاف ڈرامائی کامیابی کے بعد انگلینڈ کی کوارٹر فائنل میں رسائی


روزنامہ پریس کانفرنس

پینلٹی روکنے کے بعد انگلینڈ کے کھلاڑی کیپر جارڈن پک فورڈ کے پیچھے بھاگ رہے ہیں
انگلینڈ نے ورلڈ کپ میں پہلی بار پینلٹی شوٹ آّؤٹ میں ڈرامائی کامیابی حاصل کر کے 12 سال بعد فٹبال کے عالمی مقابلے کے کوارٹر فائنل میں جگہ حاصل کر لی ہے۔

لاطینی امریکی ٹیم کولمبیا کے خلاف ماسکو کے سپارٹاک سٹیڈیم میں کھیلنے جانے والے دوسرے راؤنڈ کے آخری میچ میں کولمبیا کے کھلاڑی کارلوس باکا کی پینلٹی انگلینڈ کے گول کیپر جارڈن پکفورڈ نے روک لی جس کے بعد ایرک ڈائر نے آخری پینلٹی سکور کر کے اپنی ٹیم کو فتح دلا دی۔

اس جیت کے نتیجے میں انگلینڈ اب ہفتے کو سویڈن کے خلاف سمارا میں کوارٹر فائنل کھیلے گا۔

ورلڈ کپ کے مقابلوں کے بارے میں مزید پڑھیے

نیمار نے برازیل کو کوارٹر فائنل میں پہنچا دیا

میسی اور رونالڈو نے کن کی نیندیں اڑائی ہوں گی؟

ورلڈ کپ 2018: روس 52 سال بعد ورلڈ کپ کوارٹر فائنل میں

پینلٹی شوٹ آؤٹ کے ڈرامے سے قبل ایسا لگ رہا تھا کہ انگلینڈ کے مینیجر گیرتھ ساؤتھ گیٹ کی ٹیم کسی طرح سے ایک ایسے میچ میں فتح حاصل کرنے میں کامیاب ہو جائے گی جس میں دونوں ٹیموں نے جارحانہ رویہ اختیار کیا اور یکے بعد دیگرے ایک دوسرے کے خلاف فاؤل کیے۔

انگلینڈ کے کپتان ہیری کین نے دوسرے ہاف کے آغاز کے 12 منٹ بعد اس ورلڈ کپ میں اپنا چھٹا گول سکور کیا لیکن کولمبیا کے یری منا نے میچ کے آخری لمحات میں کارنر پر گول کر کے میچ برابر کر دیا جس کے بعد اضافی وقت کے کھیل میں دونوں ٹیمیں کوئی گول نہ کر سکیں۔

اس موقعے پر لگ رہا تھا کہ انگلینڈ کا ماضی میں پینلٹی شوٹ آؤٹ میں نہایت خراب ریکارڈ ایک بار پھر آڑے آئے گا۔ یاد رہے کہ بڑے ٹورنامنٹس میں آج تک انگلینڈ نے کولمبیا کے میچ سے قبل سات بار پینلٹی شوٹ آؤٹ کا سامنا کیا تھا جن میں سے چھ میں انھیں ناکامی کا منہ دیکھنا پڑا ہے

جب پینلٹی شوٹ آؤٹ کا آغاز ہوا تو ایک بار پھر بے یقینی کی کیفیت انگلینڈ پر طاری ہو گئی جب ان کے کھلاڑی جارڈن ہینڈرسن نے اپنی کک ضائع کر دی جسے کولمبیا کے کیپر اوسپینا نے شاندار انداز میں روک لیا۔

لیکن اس کے بعد کولمبیا کے ماٹیوس اوریب نے اپنی کک ضائع کر دی، جس سے انگلینڈ کو واپس آنے کا موقع مل گیا۔

اس جیت کے بعد اب انگلینڈ کے لیے فائنل کی راہ میں کوئی سابق عالمی چیمپیئن موجود نہیں ہے۔ انگلینڈ اگر سویڈن کے خلاف کوارٹر فائنل میں جیت حاصل کر لیتا ہے تو اس کا مقابلہ کروشیا یا میزبان ملک روس کی فاتح ٹیم سے ہوگا۔

یاد رہے کہ ورلڈ کپ کا فائنل 15 جولائی کو کھیلا جائے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں