20

’’ساکھ کے مسائل سامنے آچکے اور ۔ ۔ ۔‘‘ وزارت قانون نے راناثناء اللہ کے مقدمے کی سماعت کرنیوالے جج کو بھی تبدیل کرنے کا فیصلہ کرلیا، اہم قدم اٹھا لیا


لاہور (ڈیلی پریس کانفرنس)وزارت قانون وانصاف نے لاہور ہائیکورٹ سے مسلم لیگ(ن) کے رہنما رانا ثناء اللہ کے مقدمے کو سننے والے جج کو تبدیل کرنے کی درخواست کردی۔لا اینڈ جسٹس ڈویژن کی جانب سے لاہور ہائیکورٹ کے رجسٹرار کو لکھے گئے خط میں حکومت کی جانب سے کہا گیا ہے کہ لاہور کے ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج مسعود ارشد کو 7 فروری 2017 کو عرصہ تین سال کیلئے ڈیپوٹیشن پر لاہور میں خصوصی عدالت برائے انسداد منشیات کے جج کا چارج دیا گیا تھا۔خط میں کہا گیا کہ اب مبینہ طور پر مذکورہ جج کی غیر جانبداری اور ساکھ کے مسائل سامنے آئے ہیں لہٰذا رجسٹرار یہ خط لاہور ہائیکورٹ کے چیف جسٹس کے سامنے رکھیں تاکہ مذکورہ جج کی جگہ انسداد منشیات کی خصوصی عدالت میں کسی غیر جانبدار جج کو تعینات کیا جا سکے۔“خط کے مطابق ”اس دوران یہ وزارت جج مسعود ارشد کو حکم دیتی ہے کہ وہ فوری طور پر اپنا کام چھوڑ دیں۔“وزارت قانون کے خط میں لاہور ہائیکورٹ کے رجسٹرار سے کہا گیا ہے کہ اس معاملے کو انتہائی ضروری اور ترجیحی خیال کرتے ہوئے فوری طور پر عمل کرنے کی درخواست کی جاتی ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں