35

این اے 249 کا ضمنی الیکشن ، پیپلز پارٹی نے میدان مار لیا ،غیرحتمی اور غیر سرکاری نتائج نے سب کو حیران کردیا


کراچی ر(ڈیلی پریس کانفرنس) این اے249کےضمنی انتخاب میں تمام273پولنگ سٹیشنز کے غیرحتمی اور غیر سرکاری نتائج کے مطابق پاکستان پیپلز پارٹی کے قادرخان مندوخیل نے 16ہزار ایک سو چھپن ووٹ حاصل کر کے میدان مار لیا ہے۔
غیر حتمی اور غیر سرکاری نتیجے کے مطابق مسلم لیگ ن کے ڈاکٹر مفتاح اسماعیل 15ہزار چار سو تہتر ووٹ حاصل کر کے دوسرے،کالعدم تحریک لبیک کے نذیر احمد 11ہزار ایک سو پچیس ووٹ لے کر تیسرے،پاک سرزمین پارٹی کے مصطفیٰ کمال نو ہزار دو سو ستائیس ووٹ لے کر چوتھے،پاکستان تحریک انصاف کے امجد آفریدی آٹھ ہزار نو سو بائیس ووٹ لے کر پانچویں جبکہ متحدہ قومی موومنٹ(ایم کیو ایم پاکستان) حافظ محمد مرسلین سات ہزار پانچ سو گیارہ ووٹ لے کر چھٹے نمبر پر رہے۔پاکستان پیپلز پارٹی کے امیدوار قادر خان مندوخیل کی کامیابی کے ساتھ ہی بلاول بھٹو زرداری نے سوشل میڈیا پر تیر کے نشان کے ساتھ ’شکریہ کراچی‘ کا پیغام شیئر کیا جبکہ مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز شریف نے این اے 249 کراچی کی نشست پر پیپلز پارٹی کے امیدوار کی کامیابی کے بعد الیکشن کمیشن سے نتائج روکنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ چند سو ووٹوں سے ن لیگ سے جیت چرائی گئی، الیکشن کمیشن کو متنازع ترین انتخابات میں سے ایک اس الیکشن کا نتیجہ روکنا چاہیے اور اگر الیکشن کمیشن ایسا نہ بھی کرے تو بھی یہ کامیابی عارضی ہوگی اور جلد فتح ن لیگ کے حصے میں آئےگی۔یاد رہے کہ پیپلز پارٹی نے ضمنی انتخاب میں کامیابی حاصل کرکے تحریک انصاف کی جیتی ہوئی نشست چھین لی ہے۔
این اے 249کی نشست پاکستان تحریک انصاف کی جانب سے خالی کی گئی تھی، فیصل واوڈا نے سینیٹر بننے کے باعث ایم این اے کی سیٹ خالی کی تھی ۔ انہوں نے 2018 کے عام انتخابات میں مسلم لیگ ن کے صدر میاں شہباز شریف کو انتہائی تھوڑے مارجن سے یہاں سے شکست دی تھی۔
حلقے میں پولنگ کا وقت صبح آٹھ بجے سے بغیر کسی وقفے کے شام پانچ بجے تک جاری رہا ،حلقے میں کچھ مقامات پرانتخابی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزیاں بھی دیکھنے میں آئیں۔ایک پولنگ سٹیشن پر پریزائڈنگ آفیسر نے دو بجے ہی فارم 45 پر پولنگ ایجنٹس سے دستخط کرالیے۔پی ایس پی کے رہنما حسان صابر کے مطالبے پردستخط شدہ فارم 45 منسوخ کردیے گئے۔ الیکشن کمیشن نے دوران پولنگ پی ٹی آئی کے چھ ارکان اسمبلی فردوس شمیم نقوی، راجا اظہر، سعید آفریدی، ملک شہزاد اعوان، بلال غفار ،شاہ نواز جدون اورن لیگ کے کھیل داس کوہستانی کو حلقے سے نکل جانے کا حکم دیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں