27

شہبازشریف نے قومی اسمبلی میں بھارتی طیارے کو گرانے والے پائلٹ حسن صدیقی کا نام لے کر کیا کہا ؟ جانئے


اسلام آباد (ڈیلی پریس کانفرنس)اپوزیشن لیڈر شہبازشریف نے کہاہے کہ اگر حسن صدیقی کا ذکر نہ کیا جائے تو بات مکمل نہیں ہو گی جو کہ قوم کے ہیرو ہیں اور یکا یک پوری قوم کے آنکھوں کے تارے بن چکے ہیں ۔

ضرور پڑھیں: کبیر والا میں سکول کی چھت گر گئی، متعدد بچے زخمی
شہبازشریف نے کہا کہ پلوامہ میں جو واقع ہوا پاکستان نے بھی اس کی مذمت کی جبکہ نریندر مودی دہشتگرد ہیں ، کون نہیں جانتا کہ جب وہ گجرات کے وزیراعلیٰ تھے تو انہوں نے ہزاروں مسلمانوں کو وہاں پر شہید کیا تھا ، دنیا کے ممالک نے اس کا داخلہ بند کر دیا گیا ، اخبارات اور ٹیلی ویژن میں اس کو انسانیت کا قاتل کہا گیا ، آج الیکشن مہم میں اس کے نمبرز کم ہو گئے ہیں اور اس نے واقعے کی آڑ میں جنونی کیفیت پیدا کر دی ہے ۔شہبازشریف کا کہناتھا کہ یہ کشیدگی پہلی بار نہیں ہوئی بلکہ پہلے بھی ہم جنگیں لڑ چکے ہیں ۔
شہبازشریف کا کہناتھا کہ بھارت کو کشمیریوں کو ان کا حق دینا پڑے گا ، کشمیر ی بھائیوں کی سفارتی حمایت جاری رکھیں گے ، کشمیر کی وادی خون سے سرخ ہو چکی ہے ۔شہبازشریف کا کہناتھا کہ پاکستانی شاہینوں نے بھارتی طیارے گرا کر 1965 کی جنگ کی یاد تازہ کر دی ہے ، شاہینوں نے بھارت جو اب دیتے ہوئے موثر کارروائی کی ، ہمیں اپنی فوج پر فخر ہے ، ہمارے جواب ملک کے چپے چپے کی حفاظت کریں گے ۔ان کا کہناتھا کہ بد قسمتی سے ہمارے ہمسائے نے کبھی پاکستان کو دل سے تسلیم نہیں کیا ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان بربریت اور دہشتگرد کا شکار رہا ،دہشتگردی کیخلاف جنگ میں ہمارے 70 ہزار شہری شہید ہوئے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں