93

عظیم ترک حکمران جس نے مسلمانوں کو دنیا کی طاقتورقوم بنادیا تھا۔۔۔ قسط نمبر 18

اکبر نے جانا کہ کام مکمل ہوچکا ہے۔ چنانچہ وہ جانے کے لیے مڑا لیکن قاسم نے اسے روک لیا۔ چبوترے پر بیٹھا ادھیڑ عمر شخص جو کنکھیوں سے قاسم کا خط پڑھنے کی کوشش کررہاتھا سٹپٹا گیا۔ قاسم کے خط کا مضمون ہی انتہائی عجیب تھا۔ اگر خط مارتھا یا ابوجعفر کے ہاتھ لگ جاتا تو بھی راز نہ کھل سکتا ۔ قاسم نے اب تک ایک دانشمند سراغ رساں ہونے کا ثبوت دیا تھا۔ اس نے اکبر سے کہا۔

’’دیکھو اکبر………….. اپنی مالکن سے کہنا کہ اس خط کا جواب آج ہی دے ۔ اور وہ بھی جلد سے جلد…………اکبر !تم خود اپنی مالکن کا جواب لے کر آنا۔ میں سہہ پہر کے بعد تمہارا انتطار کروں گا۔ لالہ شاہین کی یادگار پر۔‘‘

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں