129

چیمپئنز ٹرافی کیلئے پاکستانی کھلاڑیوں کا فٹنس لیول بہت کم ہے: آسٹریلین ٹرینر

کراچی: آسٹریلیا کے فیزیکل ٹرینر ڈینئل ہیری کا کہنا ہے کہ پاکستان ہاکی ٹیم کا چیمپئنز ٹرافی کے لیے فٹنس لیول بہت کم ہے جس کو بہتر بنانے کی ضرورت ہے۔

چیمپئنز ٹرافی کی تیاری کے لیے پاکستان ہاکی ٹیم کا تربیتی کیمپ ان دنوں عبد الستار ایدھی ہاکی اسٹیڈیم میں جاری ہے۔ ایک ہفتے تک بھرپور ٹریننگ کے بعد اب کھلاڑیوں کی فزیکل فٹنس پر کام کیا جارہا ہے۔

آسٹریلیا سے تعلق رکھنے والے فزیکل ٹرینر ڈینئل بیری کی نگرانی میں کھلاڑیوں کے مختلف فزیکل سیشن ہوئے جن میں اسپیڈ ٹیسٹ لیا گیا اور کھلاڑیوں سے مختلف مشقیں کرائی گئیں۔

اس سے قبل ڈینئل ہیری نے ایبٹ آباد میں پاکستان ہاکی ٹیم کی فٹنس پر کام کیا تھا اور اب وہ پاکستانی کھلاڑیوں کی فٹنس بہتر بنانے کے لئے کراچی پہنچے ہیں۔

ڈینئل ہیری کا میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ کھلاڑیوں کا فٹنس لیول انتہائی کم ہے۔ یویو ٹیسٹ میں کھلاڑیوں کا فٹنس لیول 20 پلس ہے جب کہ دیگر ٹیموں کے کھلاڑیوں کا لیول 29 تک ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ پہلے کی نسبت فٹنس میں بہتری آرہی ہے تاہم ماڈرن ہاکی میں کھلاڑیوں کی سو فیصد فٹنس کا ہونا بہت ضروری ہے۔

ڈینئل ہیری نے بتایا کہ پاکستانی کھلاڑیوں کا اصل مسئلہ فٹنس ہے، جب تک کھلاڑی مکمل فٹ نہیں ہوگا وہ بہتر نتائج نہیں دے سکتا ۔

دوسری جانب ٹیم کے ہیڈ کوچ رولینٹ آلٹمنز ایک ہفتے کی چھٹی گزارنے کے بعد آج سے کیمپ جوائن کرلیں گے۔

چیمپئنز ٹرافی کے لیے پاکستان ٹیم کے ایک روزہ ٹرائیلز 30 مئی کو ہوں گے اور کیمپ میں شریک 30 میں سے 22 کھلاڑیوں کا انتخاب کیا جائے گا جس کے بعد ٹیم کا اعلان ہوگا۔

پاکستانی ہاکی ٹیم 2 جون کو ہالینڈ روانہ ہو گی جہاں 18 روز کا ٹریننگ کیمپ لگایا جائے گا۔

اس دوران پاکستان ٹیم آسٹریلیا سے تین اور ہالینڈ کے خلاف ایک پریکٹس میچ کھیلے گی جس کی بنیاد پر 21جون کو 18 کھلاڑیوں کا انتخاب کیا جائے گا جو 23جون سے شروع ہونے والی چیمپئنز ٹرافی میں شرکت کریں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں